جوہری ہتھیاروں کی دوڑ، بھارت 172 وار ہیڈز کے ساتھ پاکستان سے آگے

جوہری ہتھیاروں

سویڈن کے انٹرنیشنل ریسرچ انسٹیٹیوٹ کے مطابق رواں سال بھارتی وار ہیڈز کی تعداد 164 سے بڑھ کر 172 ہوگئی جبکہ پاکستانی وار ہیڈز 170 پر برقرار ہیں۔

اسٹاک ہوم انٹرنیشنل پیس ریسرچ انسٹی ٹیوٹ (سیپری) کی جانب سے سالانہ رپورٹ شائع کی گئی ہے۔ رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ بھارت کے پاس اب پاکستان سے زیادہ ایٹمی ہتھیار موجود ہیں۔

رپورٹ کے مطابق بھارت نے ایٹمی ہتھیاروں کے ذخیرے میں کچھ اضافہ کیا ہے۔ جنوری 2023 میں جن وار ہیڈز کی تعداد 164 تھی وہ جنوری 2024 میں 172 ہوگئے۔ اس اضافے نے انڈیا کو دنیا کی جوہری ریاستوں کی فہرست میں چھٹے نمبر پر پہنچا دیا ہے۔

بھارت میں زہریلی شراب پینے سے 25 افراد ہلاک ، 60 اسپتال داخل

دوسری طرف پاکستان نے وار ہیڈز کی تعداد میں کوئی اضافہ نہیں کیا جو جنوری 2023 اور 2024 دونوں میں 170 ہی تھے۔

سیپری کے مطابق چین نے بھی اپنے وار ہیڈز کی تعداد میں کافی اضافہ کیا ہے اور جنوری 2023 میں جو تعداد 410 تھی، وہ جنوری 2024 میں 500 تک پہنچ گئی ہے جس میں مزید اضافے کے امکانات ہیں۔


متعلقہ خبریں