جی میل ایپلی کیشن میں ٹرانسلیشن کا فیچر متعارف


نیویارک: ای میل کمپنی گوگل نے ڈیسک ٹاپ کے بعد اب موبائل ایپلی کیشن پر بھی ترجمے کے فیچر کو پیش کردیا ہے۔

واٹس ایپ اور آئی میسجز سے مقابلے کیلئے گوگل کا نیا فیچر متعارف

کمپنی نے اپنی بلاگ پوسٹ میں بتایا ہے کہ جی میل کی ایپلی کیشن میں 8 اگست سے ٹرانسلیشن کے فیچر کو پیش کیا گیا ہے اور ترتیب وار تمام صارفین کو اس تک رسائی دے دی جائے گی۔

بلاگ میں واضح کیا گیا ہے کہ اینڈرائیڈ صارفین کے موبائلز پر 15 اگست تک مذکورہ فیچر نظر آنے لگے گا جب کہ آئی او ایس صارفین کے موبائلز میں 21 اگست تک فیچر شامل ہوجائے گا۔

واضح رہے کہ گوگل جی میل پر ترجمے کی سہولت فراہم کرتا ہے جب کہ گوگل ٹرانسلیشن دنیا کی 100 سے زائد زبانوں میں بھی دستیاب ہے۔

گوگل ٹرانسلیشن کو جی میل بھی شامل کیا جا چکا ہے جب کہ ڈیسک ٹاپ پر اسے استعمال کرنے والے افراد گزشتہ کئی سالوں سے اس سہولت سے فائدہ اٹھا رہے ہیں۔

واٹس ایپ میں ویڈیو کال کے دوران اسکرین شیئرنگ کا فیچر متعارف

ڈیسک ٹاپ کے بعد اب کمپنی نے جی میل ایپلی کیشن یعنی موبائل ورژن پر بھی ترجمے کے فیچر کو شامل کرلیا۔

کمپنی کے مطابق ترجمے کا فیچر ای میل کے ٹاپ پر نظر آئے گا، صرف ایک کلک پر صارفین موصول ہونے والی ای میل کو مطلوبہ زبان میں پڑھ سکیں گے۔

اس ضمن میں واضح کیا گیا ہے کہ اگر کسی صارف کو آئندہ 15 دن کے اندر ای میل کے ٹاپ پر ترجمے کا فیچر نظر نہ آئے تو ایسے صارفین کو جی میل کی سیٹنگ میں جا کر ٹرانسلیشن کے فیچر کو آن کرنا پڑے گا۔

حروف کی حد ختم؟ ٹوئٹر پر پوری کتاب بھی بھیجنا ممکن ہو گا

کمپنی کے مطابق ٹرانسلیشن کے آپشن کو ڈسمس کیے جانے کے بعد دوبارہ بھی مذکورہ فیچر ای میل کے ٹاپ پر نطر آئے گا لیکن اگر کوئی صارف ترجمے کے فیچر کو ہمیشہ کے لیے سیٹنگ میں جا کر بلاک کرے گا تو اس سے دوبارہ ترجمے کی اجازت دینا نہیں پوچھا جائے گا۔


متعلقہ خبریں