چٹاگانگ ٹیسٹ ،202 کا ہدف، پاکستانی اوپنرز پھر جم گئے


پہلے ٹیسٹ میچ میں بنگلہ دیش کی جانب سے جیت کے لیے دیئے گئے 202 رنز ہدف کے تعاقب میں پاکستانی اوپنرز نے شاندار آغاز فراہم کیا ہے۔

چٹا گانگ میں کھیلے جانے والے پہلے ٹیسٹ میچ کی دوسری اننگز میں بنگلا دیش کی پوری ٹیم 157 رنز  پر ڈھیر ہو گئی اور پاکستان کو جیت کے لیے 202 رنز کا ہدف دے دیا۔

قومی ٹیم کی جانب سے دوسری اننگز کا آغاز اوپننگ جوڑی عابد علی اور عبداللہ شفیق نے کیا۔ دونوں کھلاڑیوں نے لگاتار دوسری اننگز میں 100 رنز کی شراکت داری قائم کر کے توفیق عمر اور عمران فرحت کا ریکارڈ برابر کر دیا۔

توفیق عمر اور عمران فرحت نے 2003 میں جنوبی افریقہ کے خلاف دونوں اننگز میں 100 رنز کی شراکت قائم کی تھی۔

عبداللہ شفیق 53 اور عابد علی 56 رنز کے ساتھ ناقابل شکست رہے۔

بنگلا دیش نے چوتھے روز اپنی دوسری اننگز کا آغاز 39 رنز چار کھلاڑی آوٹ پر کیا تو حسن علی مشفیق الرحیم کو کلین  بولڈ کر دیا،انہوں نے 16 رنزبنائے۔

یہ بھی پڑھیں: کرکٹر حسن علی کو ایمپائر کی تنبیہ

یاسر علی 36 رنز بنا کر ریٹائرڈ ہرٹ ہو گئے، پہلی اننگز  میں سنچری بنانے والے لٹن داس 59 رنز بنا کر پویلین لوٹ گئے۔

پاکستان  کے فاسٹ باولر  شاہین آفریدی نے  دوسری اننگز کے ہیرو رہے، انہوں نے 5 کھلاڑیوں کو آوٹ کیا، ساجد خان  نے تین جبکہ حسن علی نے دو وکٹیں حاصل کیں۔

اس سے پہلے بنگلا دیش کی ٹیم نے پہلی اننگز میں 330 رنز بنائے تھے جس کے جواب میں پاکستان کی پوری ٹیم 286 رنز پر آوٹ ہو گئی تھی اور انہیں 44 رنز  کی برتری حاصل تھی۔

بنگلہ دیش کے تیج الاسلام کی تباہ کن بالنگ کے سامنے پاکستانی بیٹرز ٹک نہ سکے تھے انہوں نے 7 وکٹیں حاصل کیں تھیں۔


متعلقہ خبریں