ڈاکٹر نے مبینہ طور پر آلہ جراحی علاج کے لیے آئی خاتون کے منہ میں چھوڑ دیا


لاہور:  لبیرٹی چوک پر قائم نجی ڈینٹل کلینک کے ڈاکٹر نے مبینہ طور پر آلہ جراحی (سرجیکل ٹول) علاج کے لیے آئی ہوئی خاتون کے منہ  میں چھوڑ دیا۔

متاثرہ خاتون کا کہنا ہے کہ انہوں نے رواں سال 20 جون کو ڈینٹل کلینک سے اپنا علاج کرایا تھا۔ ڈاکٹر کی مبینہ غفلت کے باعث منہ میں انفیکشن اور السر ہو گیا۔ ایکسرے کروانے کے بعد انفیکشن کی تصدیق ہو گئی۔

متاثرہ خاتون کا کہنا ہے کہ رابطہ کرنے پر کلینک کی ڈاکٹر جویریہ نے ملاقات کر نے سے انکار کر دیا۔ ڈاکٹر کی مجرمانہ غفلت کے باعث خاتون کو اپنے دانتوں سے ہاتھ دھونے پڑے۔

یہ بھی پڑھیں: اسپتال منتقل کرنے کی یوسف عباس کی درخواست مسترد

متاثرہ خاتون کا  ادارے کا لائسنس منسوخ کرنے کا مطالبہ کر دیا۔ متاثرہ خاتون کی انصاف کے لیے اعلی حکام سے انصاف کی اپیل کی ہے۔

متاثرہ خاتوں نے اپنی داد رسی کے لیے پنجاب ہیلتھ کئیر کیمشن سے بھی رجوع کر لیا تاہم کوئی شنوائی نہیں ہوئی۔ خاتوں نے کہا کہ سینیئر ڈاکٹر سے رجوع کیا لیکن انہوں نے معمولی واقع قرار دیکر بات  ٹال دی۔


متعلقہ خبریں