’ایجنڈا حکومت گرانا نہیں، قوم کے مسائل کا حل تلاش کرنا ہے‘



لاہور: جمیعت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان کا کہنا ہے کہ ہمارا ایجنڈا حکومت کو گرانا یا بنانا نہیں بلکہ قوم کو درپیش مسائل کا حل تلاش کرنا ہے۔

جاتی امرا میں سابق وزیر اعظم میاں محمد نواز شریف سے ملاقات کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ نواز شریف سے تمام امور پر بات چیت ہوئی ہے اور ہم سب اس بات پر متفق ہیں کہ موجودہ سیاسی حالات میں اے پی سی ناگزیر ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ چونکہ شہباز شریف مسلم لیگ (ن) کے سربراہ ہیں لہٰذا نواز شریف اے پی سی میں شمولیت کے حوالے سے حتمی فیصلے کا اعلان ان سے ملاقات کے بعد کرنا چاہتے ہیں۔

مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ ہم موجودہ حکومت کو جائز تصور نہیں کرتے لیکن اس کے بعد ان کی جو کارکردگی ہے اس سے ملک کو بہت نقصان ہو رہا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ جعلی مینڈیٹ کی حکومت سے پورا ملک متاثر ہورہا ہے اور خاص طور پر ہمارے خارجہ تعلقات، قرضوں کا بوجھ، زر مبادلہ کے ذخائر میں کمی، روپے کی قدر کم ہونا اور مہنگائی میں دو سو فیصد اضافہ جیسے مسائل پیدا ہو رہے ہیں۔

ذرداری نواز ملاقات کے حوالے سے ان کا کہنا تھا کہ سیاست میں کبھی بھی اتنے برے حالات نہیں ہوتے کہ ایک دوسرے سے ملا بھی نہ جا سکے، مسائل کے حل کے لیے آپس میں مل جل کر ہی کام کیا جا سکتا ہے۔


متعلقہ خبریں