فیس بک بند، مارک زکر برگ کو چند گھنٹوں میں 10 کھرب کا نقصان

مارک زکر برگ

دنیا کی امیر ترین شخصیات میں سے ایک فیس بک کے بانی کو چند ہی گھنٹوں میں کھربوں کا نقصان ہو گیا۔

سوشل میڈیا ویب سائٹس فیس بک، انسٹاگرام اور واٹس ایپ بند ہونے کے باعث کمپنی کے مالک مارک زکر برگ کو چند گھنٹوں میں ہی ساڑھے 6 ارب ڈالر کا نقصان ہوگیا ہے۔

ارب پتی افراد کی دولت کا تخمینہ جاری کرنے والے فوربز میگزین کے مطابق اس کے بعد مارک کو امیر ترین شخصیات کی فہرست میں بھی تنزلی کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔

مارک زکر برگ دنیا کے پانچویں امیر ترین شخص سے ایک درجہ تنزلی کے بعد چھٹے نمبر پر آگئے ہیں۔

سٹاک مارکیٹ میں اب تک فیس بک کے شیئرز کی ویلیو5.41 فیصد تک کم ہوچکی ہے۔ بریک ڈاؤن کے بعد سے فیس بک کے ایک شیئر کی قیمت میں 18.67 ڈالر کی کمی آئی ہے اور یہ 324.45 ڈالر کا رہ گیا ہے۔

آخری بار 2018 میں فیس بک کو 14 گھنٹے کے لیے بلیک آوٹ کا سامنا کرنا پڑا تھا جبکہ 2008 میں یہ بلیک آوٹ پورے دن کا تھا۔

فیس بک، واٹس ایپ اور انسٹاگرام کی سروسز 4 اور 5 اکتوبر کی درمیانی شب دنیا بھر میں بند ہوگئی تھی جو 6 گھنٹے بعد بحال ہوئی۔

فیس بک کے مطابق ان کے ٹریفک نیٹ ورک اور ڈیٹا سینٹر کے آلات میں خرابی کی وجہ سے ان کی سروس بند ہوگئی تھی، تاہم تصدیق کی کہ سروس کی بندش کے دوران صارفین کا ڈیٹا لیک نہیں ہوا۔

 

 


متعلقہ خبریں