کراچی میں ہیٹ ویو کا راج، شہری پریشان


کراچی: شہر قائد میں ہیٹ ویو کا زور برقرار ہے اور  دوسرے  روز بھی شہریوں کے لیے انتہائی سخت ثابت ہوا۔ یکم مئی رواں سال کا گرم ترین دن رہا اور  شہرکا درجہ حرارت 42  ڈگری سینٹی گریڈ کوچھو گیا۔

محکمہ موسمیات کےمطابق کراچی میں منگل سے  شروع ہونے والا ہیٹ ویو کا سلسلہ ہفتے تک جاری رہے گا تاہم  درجہ حرارت میں کمی آسکتی ہے۔ آج  کراچی میں سورج نے صبح سے ہی آگ برسنا شروع کردی جس کے باعث شہریوں کو سخت مشکلات کا سامنا رہا۔ 

بدھ کے روز زہر کا زیادہ سے زیادہ درجہ حرارت  42 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا۔

دھوپ کی تپش سے شہریوں کے پسینےچھوٹ گئےجبکہ سمندری ہوائیں بند رہیں اور ساتھ ہی خشک اور گرم  ہوا کے تھپیڑوں کا راج رہا۔ چھٹی کی وجہ سے  شہریوں کی بڑی تعداد تو گھروں سے نہ نکلی لیکن جومجبورا  گھروں سےنکلےوہ گرمی کی شدت سے بلبلا اٹھے۔

یہ بھی پڑھیں: ملک بھر میں موسم خشک، کراچی میں ہیٹ ویو کا خطرہ

شہر میں دوپہر کےبعد درجہ حرارت 36 ڈگری سینٹی گریڈر یکارڈ کیا گیاجبکہ ہوا میں نمی کا تناسب 20 فیصد رہا اور شمال مغرب سے چلنے والی ہواؤں کی رفتار آٹھ ناٹیکل مائیل رہی۔

واضح رہے کچھ برس قبل کراچی میں ہیٹ ویو کے باعث بڑی تعداد میں ہلاکتیں ہوئیں تھی جس کے بعد ہر برس گرمی کے موسم میں شہر قائد کے لیے الرٹ جاری کردیا جاتا ہے اور پیشگی انتظامات بھی کرلیے جاتے ہیں تاکہ انسانی جانوں کو بچایا جا سکے۔

ماہرین موحولیات کراچی میں گزشتہ کچھ برس سے آنے والے ہیٹ ویو کے سلسلہ کی وجہ درختوں کی کمی اور بلند و بالا عمارتوں کی تعمیر بتاتے ہیں لیکن اس متعلق کوئی اقدامات نہیں کیے جارہے۔


متعلقہ خبریں