بغاوت کیس: نواز شریف اور شاہد خاقان عدالت طلب


لاہور: بغاوت کیس میں لاہور ہائی کورٹ نے  سابق وزرائے اعظم  میاں نوازشریف اور شاہد خاقان عباسی کو کل طلب کر لیا ہے۔

اظہرصدیق ایڈووکیٹ نے نوازشریف اور شاہد خاقان عباسی کے خلاف بغاوت کے مقدمے کی کارروائی کے لیے درخواست دائرکی تھی جس پرجسٹس مظاہرعلی نقوی کی سربراہی میں تین رکنی فل بنچ نے تحریری حکم جاری کیا اور فریقین کو طلب کر لیا، حکم میں کہا گیا ہے کہ فریقین کل پیش ہو کر اپنی پوزیشن واضح  کریں۔

نوازشریف کے خلاف درخواست دائر کی گئی تھی جس میں کہا گیا تھا کہ سابق وزیر اعظم  نے متنازعہ انٹرویو دے کر ملک و قوم سےغداری کی ہے اس لیے ان کے خلاف بغاوت کے الزام میں کارروائی کی جائے۔

درخواست گزار کا موقف ہے کہ سابق وزیراعظم  شاہد خاقان عباسی نے قومی سلامتی کمیٹی کی کارروائی سے نواز شریف کو آگاہ کیا جو درست نہیں اور ایسا کرکے شاہد خاقان نے حلف کی پاسداری نہیں کی، درخواست گزار نے عدالت سے استدعا کی کہ دونوں سابق وزرائے اعظم کے خلاف آرٹیکل چھ  کے تحت کارروائی کی جائے۔

نواز شریف نے ممبئی حملوں کے خلاف دائر مقدمے کے حوالے سے بیان دیتے ہوئے کہا تھا کہ غیر ریاستی عناصر کہلانے والی عسکری تنظیمیں اب تک سرگرم  ہیں، کیا ہمیں انہیں سرحد  پار جا کر ممبئی میں 150 افراد کو قتل کرنے کی اجازت دینی چاہیے۔


متعلقہ خبریں