بابر سے مقابلے میں بچپن کی دوستی آڑے نہیں آئی گی، کوئی پریشر نہیں، کلیم ثناء

کلیم ثناء

کینیڈا کرکٹ ٹیم کے فاسٹ باؤلر اور بابر اعظم کے ساتھی کرکٹر کلیم ثناء نے کہا ہے کہ بابر سے مقابلے میں بچپن کی دوستی آڑے نہیں آئی گی۔

نجی ٹی وی چینل کو انٹرویو دیتے ہوئے انہوں نے بتایا کہ وہ پاکستانی کپتان بابر اعظم کے ساتھ 8 سال کرکٹ کھیل چکے ہیں۔ انڈر 16 سے ساتھ تھا۔ پاکستان میں جو آخری فرسٹ کلاس کھیلا تھا اس میں بھی بابر حریف ٹیم میں تھا۔

وقت آگیا ہے کوچز نہیں پوری ٹیم کو تبدیل کیا جائے، وسیم اکرم کارکردگی سے ناخوش

کلیم ثناء کا کہنا تھا کہ پاکستان میں پیدا ہوا لیکن اب کینیڈا کا کھلاڑی ہوں، ورلڈکپ میچ کے لیے پُرجوش ہوں۔ 2009 میں پاکستان انڈر۔ 19 ٹیم سے منتخب ہوا جبکہ 2010 میں انڈر۔19 ورلڈکپ بھی کھیلا تھا، انڈر۔19 کے دور میں میرا بھی ارمان تھا کہ پاکستان کے لیے کھیلوں۔

کپتان بابر اعظم کی دوستی کے حوالے سے انہوں نے کہا کہ بابر سے مقابلے میں بچپن کی دوستی آڑے نہیں آئے گی۔ بابر آج کل تنقید کی زد میں ہے لیکن وہ اب بھی چار بہترین بیٹرز میں سے ایک ہیں۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان دو میچز ہارنے کے بعد دباؤ میں ہوگا، ہم پاکستان کو ہرانے کے لیے پورا پلان کر رہے ہیں۔ ورلڈکپ کے لیے کافی محنت کی ہے، ٹیم کا مورال اس وقت کافی بلند ہے۔ ہم بھی ورلڈ کپ کھیلنے اور اچھا کرنے آئے ہیں۔

کِنگ کا کیا کروں جب میچ نہیں جتواسکتا؟ بابر کو ڈومیسٹک میں رگڑا کھانا ہوگا، احمد شہزاد

کینیڈین کرکٹر نے کہا کہ میں نیا گیند کرتا ہوں اس لیے میرا ہدف بابر اور رضوان کی وکٹ لینا ہے۔ پاکستان ٹیم کے پلیئرز کے ساتھ کھیلا ہوں، ان کے بارے میں اندازہ ہے، بابر اعظم کے خلاف باؤلنگ کرواتے وقت کوئی پریشر نہیں ہوگا۔


متعلقہ خبریں