فیصل آباد اور گوجرانوالہ میں بینچ کے قیام کے لیے وکلا کا احتجاج

وکلا نے فیصل آباد سیشن کورٹ کو تالے لگا دیے | urduhumnews.wpengine.com

فائل فوٹو


فیصل آباد: جھنگ ڈسٹرکٹ بار کی طرف سے فیصل آباد ہائیکورٹ بینچ کے قیام کے لیے ہڑتال اور احتجاج کیا جارہا ہے اور وکلا نے سیشن کورٹ کے تمام دروازوں کو تالا لگا کر بند کردیا ہے۔

وکلا نے احتجاج کے دوران توڑ پھوڑ اور ہنگامہ آرائی کی ہے جس کے سبب سائلین کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے، ہڑتال کے باعث سینکڑوں مقدمات کی سماعت بھی نہیں ہو سکی ہے۔

مظاہرین نے ضلع کونسل روڈ دو طرفہ ٹریفک کے لئے بند کر دیا ہے جس سے ٹریفک کی روانی متاثر ہوئی ہے۔

احتجاج کرنے والے وکلا کا مطالبہ ہے کہ فیصل آباد کا ہائی کورٹ بینچ جلد قائم کیا جائے، بینچ کے قیام کے لئے 30 سال سے وعدے کیے جا رہے ہیں لیکن عمل درآمد نہیں ہو سکا ہے۔

گوجرانوالہ میں بھی ہائی کورٹ کے علاقائی بینچ کے قیام کے معاملے پر وکلا نے سیشن کورٹ کے داخلی راستوں کو تالہ لگا دیا ہے جب کہ بار نے غیر معینہ مدت کے لیے تالہ بندی کا نوٹیفکیشن جاری کر دیا ہے۔

تالہ بندی ہائیکورٹ کا علاقائی بینچ نہ بننے کی وجہ سے کی گئی ہے۔

مظاہرین کا کہنا ہے کہ جب تک ہائیکورٹ کے بینچ کا قیام گوجرانوالہ میں نہیں ہوتا ہمارا احتجاج یونہی جاری رہے گا۔

ڈپٹی کمیشنر فیصل آباد نے وکلا سے مذاکرات کیے اور اس بات کی یقین دہانی کرائی کہ وزیراعلیٰ پنجاب سمیت تمام متعلقہ افراد کو بذریعہ خط معاملے سے آگاہ کیا جائے گا تاہم کچھ مشتعل وکلا ڈی سی آفس میں داخل ہوئے اور انہیں کرسی سے اٹھا کر زد و کوب کیا۔


متعلقہ خبریں