نیٹو اجلاس کمزور اور الجھنوں سے بھرا ہوا تھا، یوکرینی صدر

نیٹو اجلاس کمزور اور الجھنوں سے بھرا ہوا، یوکرینی صدر

کیف: یوکرینی صدر ولادیمیر زیلنسکی نے نیٹو اجلاس کمزور اور الجھنوں سے بھرا ہوا قرار دے دیا۔

یوکرین کے صدر ولادیمیر زیلنسکی نے نیٹو اجلاس پر شدید تنقید کرتے ہوئے کہا کہ یوکرین میں جتنے لوگ مریں گے وہ نیٹو کمزوری کی وجہ سے مریں گے۔ نیٹو اجلاس میں ظاہر کیا گیا کہ ہر کسی کے لیے یورپ کی آزادی کی لڑائی پہلا مقصد نہیں۔

انہوں نے کہا کہ یہ جانتے ہوئے کہ نئے حملے اور ہلاکتیں ناگزیر ہیں لیکن اس کے باوجود نیٹو نے جان بوجھ کر یوکرین پر نو فلائی زون کا اطلاق نہ کرنے کا فیصلہ کیا اور نیٹو نے نو فلائی زون کا اطلاق نہ کر کے یوکرین کے شہروں اور دیہاتوں پر مزید بمباری کے لیے روس کو گرین سگنل دیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں: نیٹو کا روس یوکرین تنازع میں مداخلت سےانکار

زیلنسکی نے کہا کہ نیٹو ممالک کی تمام انٹیلیجنس ایجنسیاں دشمن کے منصوبوں سے واقف ہیں اور روس جارحیت جاری رکھنا چاہتا ہے لیکن یوکرین ختم ہوا تو یورپ کا بھی خاتمہ ہو جائے گا۔

انہوں نے کہا کہ نیٹو ممالک اندر سے کمزور اور خود کو غیر محفوظ سمجھتے ہیں۔


متعلقہ خبریں