’شہبازشریف کےخلاف تحریک عدم اعتماد لائی گئی تو ایوان چلنے نہیں دیں گے’

February 12, 2019

کراچی: پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) کے رہنما خورشید شاہ نے کہا ہے کہ کوئی شہباز شریف کے خلاف عدم اعتماد کی تحریک لا کر تو دکھائے، حکومت قومی اسمبلی کی کارروائی بھی نہیں چلا سکے گی۔

قائد حزب اختلاف شہباز شریف  کو حکومت کی جانب سے  پبلک اکاؤنٹس کمیٹی کے چیئرمین شپ  سے ہٹانے کی خبروں کے حوالے سے رد عمل دیتے ہوئے خورشید شاہ نے کہا ہےکہ اپوزیشن جماعتوں نے اسپیکر اسد قیصر، شاہ محمود قریشی اور پرویز خٹک کی وجہ سے پارلیمنٹ کو چلانے کی کوشش کی، ماضی میں تحریک انصاف کے اراکین ایوان میں رقص کرتے رہے اور ٹیبل پر کھڑے ہو جاتے تھے۔

انہوں نے کہا کہ حکومت نے ڈگر نہ بدلی تو اپوزیشن کو بھی ایسا ہی کرنا پڑے گا،اسمبلی کو بے توقیر طریقے سے چلانے نہیں دیں گے، عمران خان اسمبلی کو کنٹیر کی طرح چلانے کی کوشش کر رہے ہیں،اسمبلی میں بھی کنٹینر کی سیاست کر رہے ہیں۔

پیپلز پارٹی کے رہنما کا کہنا تھا کہ حکومت عوام کو ڈلیور کرنے میں ناکام رہی ہے، عمران خان کی آئی ایم ایف چیف سے ملاقات پاکستان کی تذلیل ہے،وزیراعظم کی آئی ایم ایف چیف سے ملاقات کی ماضی میں کوئی مثال موجود نہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ عمران خان پاکستان کی تذلیل کرنے کے سوا کچھ نہیں کر سکتے،کشکول توڑنے اور خود کشی کا اعلان کرنے والا خود آئی ایم ایف کے سامنے پیش ہوا ہے۔

خورشید نے کہا ہے کہ حکومت نے اسپیکر اسد قیصر کو پریشان کر دیا ہے،سپیکر کو کمیٹی ارکان کی ردو بدل کا اختیار نہیں،صرف پارٹی کی درخواست پر ردو بدل کرنے کا اختیار ہے،ایم کیو ایم حکومت کو بلیک میل کر کے فائدہ لے گی،ایم کیو ایم کی تاریخ ہے کہ موقع سے فائدہ اٹھاتی ہے، ایم کیو ایم کو اپوزیشن کا حصہ سمجھتے نہ سمجھیں گے۔

واضح رہے گزشتہ چند دنوں سے وزیراعظم عمران خان اور ان کے وزرا کی جانب سے چیئرمین پبلک اکاونٹس کمیٹی شہباز شریف کو ہٹانے سے متعلق بیانات دیئے جا رہے ہیں۔پی ٹی آئی رہنما علیم خان کی گرفتاری کے بعد اپنی وزارت سے استعفیٰ دینے  پر ردعمل دیتے ہوئے وفاقی وزیراطلاعات فواد چوہدری نے شہباز شریف سے بھی استعفیٰ کا مطالبہ کیا تھا ۔

ان کا کہنا تھا کہ علیم خان نے ایک نئی مثال قائم کی ہے۔ شہباز شریف کو بھی پی اے سی سے استعفیٰ دے دینا چاہیئے۔

انہوں نے  کہا کہ شہباز شریف عہدے سے الگ ہو کر تحقیقات کا سامنا کریں۔ پبلک اکاؤٹنس کمیٹی (پی اے سی) کو ڈھال کے طور پر استعمال کیا جا رہا ہے۔

وزیر اطلاعات نے کہا کہ ہمیں پی اے سی میں شہباز شریف کے کردار پر تشویش ہے، ہم مطالبہ کرتے ہیں کہ شہباز شریف پی اے سی سے علیحدہ ہو جائیں۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز