لاہور ہائیکورٹ کا دھواں چھوڑنے والی گاڑیوں کو بند کرنے کا حکم

Lahore High Court

لاہور: لاہور ہائیکورٹ نے دھواں چھوڑنے والی گاڑیوں کو بند کرنے کا حکم دے دیا۔

لاہور ہائیکورٹ میں اسموگ کے تدارک کے لیے دائر درخواستوں پر سماعت ہوئی۔ لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس شاہد کریم نے شہری ہارون فاروق سمیت دیگر کی درخواستوں پر سماعت کی۔

عدالت نے دھواں چھوڑنے والی گاڑیوں کو بند کرنے کا حکم دیتے ہوئے کہا کہ ٹریفک پولیس دھواں چھوڑنے والی گاڑیوں کے خلاف کارروائی کر کے متعلقہ محکمے کو آگاہ کرے۔

عدالت نے حکم دیا کہ موٹروے کے گردونواح میں آگ لگنے کے واقعات زیادہ ہوتے ہیں، ان پر قابو پایا جائے۔ موٹروے پولیس آگ لگانے کے واقعات پر کاروائیاں کرے جبکہ آئی جی موٹروے عدالتی احکامات پر عملدرآمد کروایں ورنہ توہین عدالت کی کارروائی ہو گی۔

یہ بھی پڑھیں: آج وہ فیصلے کرنے ہیں جو ملک و قوم کے مفاد میں ہوں، شہباز شریف

پی ڈی ایم اے نے ہیٹ اسٹروک سے متعلق رپورٹ عدالت میں پیش کر دی۔

رپورٹ کے مطابق ہیٹ اسٹروک سے متعلق آگاہی مہم شروع کر دی گئی ہے۔ چولستان میں 20 واٹر باؤزر بھیجے دیئے گئے ہیں اور ایک واٹر باوزر میں 12 ہزار 500 لیٹر پانی ہوتا ہے جو وہاں کے رہائشیوں کو دیا جا رہا ہے۔


متعلقہ خبریں