صدر مملکت نے آئندہ بھی انتخابات نہ ہونے کا خدشہ ظاہر کر دیا

عارف علوی (arif alvi)

اسلام آباد: صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے اکتوبر میں بھی عام انتخابات نہ ہونے کا خدشہ ظاہر کر دیا۔

صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے اپنے ایک انٹرویو میں کہا کہ میں نے تاحال عدالتی اصلاحات کا بل نہیں دیکھا تاہم جب مسودہ سامنے آئے گا تو پھر معلوم ہو گا کہ مجھے کیا کرنا ہے۔

انہوں نے کہا کہ عدالتی اصلاحات بل کی منظری کی ٹائمنگ بہتر ہو سکتی تھی کیونکہ جب بھی زبردستی کوئی کام کیا جائے تو اس سے مسائل پیدا ہوتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: ملک میں لیڈر شپ کا فقدان ہے، شاہد خاقان عباسی

ڈاکٹر عارف علوی نے کہا کہ جمہوری طاقتیں جب بھی آپس میں لڑیں تو خطرہ تو رہتا ہے اور اب بھی خطرات منڈلا رہے ہیں لیکن میں نہیں سمجھتا کہ حالات مارشل لا کی طرف جائیں گے اور میں چاہتا ہوں کہ آئین کو مسخ نہ کیا جائے۔

انہوں نے کہا کہ اس وقت بھی ملک بحران کی کیفیت میں ہے اور میں بحران میں مثبت کردار ادا کرنا چاہوں گا لیکن میں جب بھی اپنا کوئی کردار ادا کرتا ہوں تو میری رائے کو پی ٹی آئی کی رائے کہہ دیا جاتا ہے حالانکہ ایسا بالکل بھی نہیں ہے۔

یہ بھی پڑھیں: پنجاب حکومت کا آٹا تقسیم مراکز بند رکھنے کا فیصلہ

صدر مملکت نے کہا کہ جب بھی اداروں پر پریشر آتا ہے تو ان میں دراڑیں پڑتی نظر آتی ہیں اور یہ سپریم کورٹ نے طے کرنا ہے کہ الیکشن کمیشن کے پاس انتخابات ملتوی کرنے کا اختیار ہے یا نہیں۔

انہوں نے کہا کہ مجھے اکتوبر میں بھی انتخابات کا انعقاد خطرے میں نظر آ رہا ہے اور میں نے یہ خدشہ صوبائی اسمبلیاں تحلیل کرنے سے پہلے بھی عمران خان کو بتا دی تھی۔


متعلقہ خبریں