ایک دن انتخابات کرانے کی کوشش کر رہا تھا، ناکام ہو گیا، گورنر خیبر پختونخوا

ایک دن انتخابات کرانے کی کوشش کر رہا تھا، ناکام ہو گیا، گورنر خیبرپختونخوا

پشاور: صوبہ خیبرپختونخوا کے گورنر حاجی غلام علی نے کہا ہے کہ ایک دن انتخابات کرانے کی کوشش کر رہا تھا، ناکام ہو گیا، تمام سیاسی جماعتیں ایک ہی دن انتخابات کی بات کر رہی ہیں۔

حکومت کا تشدد میں ملوث عناصر کیخلاف کارروائی کا فیصلہ، پارلیمنٹ کا مشترکہ اجلاس طلب

انہوں نے کہا ہم صوبے میں منصفانہ اور غیر جانبدار انتخابات کے خواہشمند ہیں، میں نے صوبائی حکومت کا خط الیکشن کمیشن کو بھیج دیا ہے۔ انہوں نے کہا الیکشن کی تاریخ گورنر نہیں الیکشن کمیشن دے گا، اگر گورنر کو اختلاف ہو تو پھر وہ تاریخ دیں گے۔

گورنر غلام علی نے کہا قبائلی اضلاع کے لوگ احتجاج کر رہے ہیں، صوبے کی نصف آبادی احتجاج پر ہے، تمام سیاسی جماعتیں اس کا حل نکالیں، سابق وزیر اعلیٰ بھی سوات میں الیکشن نہیں لڑ سکتا ہے۔

گورنر خیبرپختونخوا غلام علی نے کہا پنجاب اور خیبرپختونخوا کے ماحول میں فرق ہے، پنجاب میں سیاسی کشیدگی جب کہ خیبر پختونخوا میں دہشت گردی بڑھ رہی ہے۔

گورنر خیبرپختونخوا کے خلاف سپریم کورٹ میں پٹیشن دائر کرنیکا اعلان

کے پی کے گورنرغلام علی نے کہا مولانا فضل الرحمان نے 15 لانگ مارچ کئے لیکن ایک گملہ نہیں ٹوٹا، وزیراعلیٰ کے ساتھ اچھے تعلقات ہیں، وہ مکمل با اختیار ہیں۔

متعلقہ خبریں