ڈیپازٹ محفوظ ہیں، اسٹیٹ بینک کی غلط خبروں کی تردید

اسٹیٹ بینک state bank

اسٹیٹ بینک نے بینک ڈپازٹس سے متعلق ڈپٹی گورنر کے بیان پر وضاحت جاری کردی۔

گزشتہ روز ڈپٹی گورنر اسٹیٹ بینک نے سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے خزانہ میں کہا تھا کہ بینک دوالیہ ہونے پر بینکوں میں صرف 5 لاکھ روپے تک کی رقم محفوظ ہوتی ہے۔

تاہم اب مرکزی بینک نے ڈپٹی گورنر کے بیان پر وضاحت جاری کرتے ہوئے کہا ہےکہ بینک ڈپازٹس بالکل محفوظ ہیں، مضبوط فریم ورک کے ماتحت پاکستان میں بینکاری نظام مستحکم اور ڈپازٹس محفوظ ہیں۔

اسٹیٹ بینک کا کہنا ہےکہ پاکستان کے بینکاری نظام میں بہ کفایت سرمایہ موجود ہے، بینکاری نظام کے منافع میں تقریباً 125 فیصد اضافہ ہوا ہے اسی لیے بینکاری شعبے میں شدید دھچکے برداشت کرنے کی اہلیت مزید بہتر ہوگئی ہے۔

اسٹیٹ بینک نے کہا کہ ڈپازٹ پروٹیکشن کارپوریشن نے بھی تحفظ میں مزید اضافہ کیا ہے، ہر ڈپازٹر کو 5 لاکھ روپے تک کا انشورنس کور فراہم کیا ہے، کسی بینک کی ناکامی پرڈی پی سی سے بیمہ کردہ رقم فوراً ڈپازٹرزکو دستیاب ہوتی ہے جب کہ ضابطے کے تحت بینک کے تصفیے کے بعد ڈپازٹس کی بقیہ رقوم بھی نکلوائی جاسکتی ہے۔


متعلقہ خبریں