سیاسی بحران، اسحاق ڈار کی ورلڈ بینک اور آئی ایم ایف حکام سے شیڈول ملاقاتیں منسوخ

اسحاق ڈار

اسلام آباد: وفاقی وزیر خزانہ سینیٹر اسحاق ڈار کی آئی ایم ایف اور ورلڈ بینک حکام سے ہونے والی ملاقاتوں کا شیڈول منسوخ کردیا گیا ہے، یہ ملاقاتیں امریکہ میں ہونا تھیں۔

میرے خلاف 144 واں مقدمہ، سب لندن پلان کا حصہ ہے، عمران خان

برطانوی خبر رساں ایجنسی ’روئٹرز‘ کے مطابق پاکستان مسلم لیگ (ن) کے مرکزی رہنما اور وفاقی وزیر خزانہ کا دورہ امریکہ ملک میں جاری سیاسی بحران کی وجہ سے منسوخ کیا گیا ہے۔ منسوخ شدہ شیڈول کے تحت سینیٹر اسحاق ڈار کی آئی ایم ایف اور ورلڈ بینک حکام سے ملاقاتیں 10 اپریل سے شروع ہونا تھیں۔

واضح رہے کہ پاکستان فروری 2023 سے آئی ایم ایف سے معاہدہ کر کے ایک ارب 10 کروڑ ڈالرز کے حصول کی کوشش کرتا رہا ہے۔ یہ رقم آئی ایم ایف کے اس بیل آؤٹ پیکچ کا حصہ ہیں جس کی منظوری 2019 میں دی گئی تھی۔

سیاسی جماعتیں عدلیہ اور افواج پاکستان کیخلاف بات نہیں کریں گی، الیکشن کمیشن

خبر رساں ایجنسی کے مطابق وفاقی وزارت خزانہ نے سینیٹر اسحاق ڈار کے دورے کے حوالے سے کسی قسم کی کوئی معلومات فراہم نہیں کی ہیں لیکن ذمہ دار حکومتی ذرائع نے دعویٰ کیا ہے کہ وزیر خزانہ کا دورہ امریکہ سیاسی بحران کی وجہ سے منسوخ کیا گیا ہے۔

حکومتی ذرائع کے حوالے سے خبر رساں ایجنسی کا کہنا ہے کہ واشنگٹن میں ہونے والے مذاکرات میں وفاقی سیکریٹری خزانہ، گورنر سٹیٹ بینک اور دیگر متعلقہ حکام پاکستان کی نمائندگی کریں گے۔

حکومت کا چیف جسٹس سے مستعفی ہونے کا مطالبہ

واضح رہے کہ سابق وزیراعظم اور چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان حکومت مخالف احتجاجی مہم چلا رہے ہیں اور انتخابات کرانے کا مطالبہ کررہے ہیں جب کہ وزیراعظم میاں شہباز شریف کا مؤقف ہے کہ عام انتخابات اکتوبر میں ہوں گے۔


متعلقہ خبریں