ڈالر کی قدر میں مسلسل اضافہ ،اسٹیٹ بینک کا بڑا ایکشن


اسٹیٹ بینک نے ملک میں ڈالر کی قدر میں مسلسل اضافے پر تمام بینکوں کے خلاف بڑا ایکشن لیا ہے۔

ذرائع کے مطابق گورنر اسٹیٹ بینک نے تمام بینکوں کے صدور کو طلب کر لیا ہے۔ مصدقہ اطلاعات ہیں ڈالر کی بے قدری میں نجی بینکوں کے عملے کا عمل دخل ہے جو ڈالر کی غیرضروری اور اضافی فروخت کررہا ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ گورنر اسٹیٹ بینک نے ڈالر کی قدر میں مسلسل اضافے پر بینکوں کے صدور کی سرزنش بھی کی ہے۔

ذرائع کے مطابق مخصوص بینکوں کا عملہ امپورٹرز اور صارفین کو ایڈوانس ڈالر خریدنے کی ترغیب دیتا رہا ہے۔ غیر ضروری خرید و فروخت سے ڈالر ملکی تاریخ کی بلند ترین سطح پر پہنچا۔

گزشتہ ہفتے ڈالر ملکی تاریخ کی بلند ترین سطح 175 روپے 65 پیسے تک پہنچا۔

اس ضمن میں گورنر اسٹیٹ نے بینکوں کے صدور کو سخت اقدامات کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے کہا ہے کہ تمام بینک ایسے ملازمین کیخلاف تادیبی کارروائی اور مانیٹرنگ کریں۔

اسٹیٹ بینک نے ہدایت کی کہ بینکوں کے ایسے ملازمین جن پر شک ہے،ا ن کے کمپیوٹر اور فون ریکارڈ کی جانچ پڑتال کی جائے۔

ذرائع کے مطابق بینکوں کو سخت ہدایات جاری ہونے کے بعد روپے کی قدر میں استحکام آنے کا امکان ہے۔


متعلقہ خبریں