روس سے ملنے والا تیل پچیس فیصد سستا پڑے گا، سینیٹرعبدالقادر

crude oil

سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے پیٹرولیم کے چیئرمین سینیٹرعبدالقادر نے کہا ہے کہ روس سے عالمی منڈی کے مقابلے میں مہنگا اور ناقص تیل آنے کی خبروں کو سختی سے مسترد کر دیا ہے۔

میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ روس سے ملنے والا تیل پچیس فیصد سستا پڑے گا اور سالانہ ایک ہزار ارب روپے سے زائد کی بچت ہوگی۔

سینیٹرعبدالقادر نے کہا کہ پاکستان ریفائنزی لمیٹڈ کے پاس اسٹوریج کی کمی ہے، اس مسئلے کے باعث روس نے پاکستان کو فلوٹنگ اسٹوریج یونٹ لانے کی پیشکش بھی کی ہے۔

سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے پیٹرولیم کے چیئرمین نے کہا کہ ہماری ریفائنریز نے روسی کروڈ آئل کو صاف کرنے کا طریقہ کار ڈھونڈ لیا ہے۔

سینیٹرعبدالقادر نے کہا کہ حکومت بروقت روس کے ساتھ تیل کی درآمد کے قواعد و ضوابط طے کرلے گی۔


متعلقہ خبریں