سپریم کورٹ پریکٹس اینڈ پروسیجر ایکٹ 2023 کو چیلنج کر دیا گیا

سپریم کورٹ supreme court

سپریم کورٹ پریکٹس اینڈ پروسیجر ایکٹ 2023 کو چیلنج کردیا گیا، مقامی وکیل نے سپریم کورٹ لاہور رجسٹری میں درخواست دائر کر دی۔

وکیل نے اپنی درخواست میں موقف اختیار کیا کہ سپریم کورٹ میں بینچز کی تشکیل چیف جسٹس کا انتظامی اختیار ہے،از خود نوٹسز میں اپیل کا حق آئین میں ترمیم کے بغیر ممکن نہیں ہے۔

قومی اسمبلی نے سپریم کورٹ پریکٹس اینڈ پروسیجر بل 2023 منظور کر لیا

موجودہ ایکٹ سپریم کورٹ کے اختیارات پر قدغن لگانے کے مترادف ہے،درخواست میں استدعا کی گئی کہ عدالت سپریم کورٹ پریکٹس اینڈ پروسیجر ایکٹ 2023 کو کالعدم قرار دے۔


متعلقہ خبریں