’حافظ سعید کی گرفتاری ٹرمپ کو تحفے میں دی گئی‘

ہر ادارہ اپنے دائرہ کار میں رہ کر کام کرے، مولانا فضل الرحمان

فوٹو: فائل


ملتان: جمیعت علمائے اسلام (جے یو آئی) کے امیر مولانا فضل الرحمان کا کہنا ہے کہ حافظ سعید کی گرفتاری ٹرمپ کو تحفے میں دی گئی ہے اور امریکی صدر نے اسے بہت سراہا ہے۔

ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ دورہ امریکہ سے قبل جہاد کشمیر کے رہنما کو گرفتار کیا گیا، وزیر اعظم اقتدار کو طول دینے کے لیے امریکہ سے بھیک مانگنے جا رہے ہیں۔

سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کی گرفتاری کی مذمت کرتے ہوئے جے یو آئی کے سربراہ نے کہا کہ حزب اختلاف کے خلاف نیب کو استعمال کیا جا رہا ہے حالانکہ وزیراعظم کے خلاف بھی مقدمات موجود ہیں لیکن ادارے اس پر خاموش ہیں، وزیراعلی خیبر پختونخوا بھی مقدمات میں مطلوب ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ہر پاکستان چاہتا ہے یہ حکومت مستعفی ہو جائے، ملک میں اسمبلی تحلیل کر کے انتخابات کرائے جائیں ۔

مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ 25 جولائی کو ملک بھر میں یوم سیاہ منایا جا رہا ہے جبکہ 28 جولائی کو کوئٹہ میں ملین مارچ ہو گا۔

انہوں نے کہا کہ ملکی تاریخ میں پہلی بار تاجروں کی کامیاب ہڑتال دیکھنے کو ملی، انہوں نے بجٹ مسترد کر دیا ہے۔

تحریک انصاف کی حکومت پر الزام لگاتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ملک سے مدارس کا خاتمہ اس کا اصل ایجنڈا ہے۔


متعلقہ خبریں