عمران خان نے بجٹ کے بعد قومی اسمبلی کی تحلیل کی پیشکش مسترد کر دی

پاور شو کرنیکا فیصلہ، دو ہفتوں کی بات ہے، معاملات ٹھیک ہو جائیں گے، عمران خان

پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے بجٹ کے بعد قومی اسمبلی کی تحلیل کی حکومتی پیشکش مسترد کر دی۔

کارکنوں سے ویڈیو لنک خطاب میں انہوں نے کہا کہ بجٹ کے بعد اسمبلی کی تحلیل کے پیچھے بدنیتی نظر آ رہی ہے۔ آپ الیکشن لڑیں جیت جائیں تو بجٹ بنا لیں۔

انہوں نے کہا کہ چودہ مئی سے پہلے اسمبلی تحلیل ہو تو پورے ملک میں الیکشن کیلئے تیار ہیں، ورنہ پنجاب اور خیبرپختون خوا میں الیکشن کرائیں۔

عمران خان نے کہا کہ پرامن احتجاج کرکے واپس جانے والے لوگ زیادہ دیر پرامن نہیں رہیں گے۔ یہ صرف اس لیے پرامن ہیں کہ الیکشن کا انتظار کررہے ہیں، ان کا غصہ الیکشن میں نکلے گا۔

ان کا کہنا تھا کہ الیکشن کی امید چلی گئی تو ملک میں سری لنکا سے برا حال ہونے والا ہے، یہ لوگ سڑکوں پر نکل آئے تو کسی کے قابو میں نہیں رہیں گے۔

سابق وزیراعظم نے کہا اسی سپریم کورٹ نے ازخودنوٹس لے کر ان کی حکومت بنائی، پہلے یہ اچھے تھے، حکمرانوں کے خلاف فیصلہ آیا تو عدالت پر حملے شروع ہوگئے۔

انہوں نے کہا کہ سپریم کورٹ کے ججز سے اپیل کرتا ہوں ذاتی لڑائی ختم کر کے ایک ہو جائیں۔


ٹیگز :
متعلقہ خبریں