نوجوانو! سازش کیخلاف باہر نکلو، وزیراعظم نے احتجاج کی کال دے دی



وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ نوجوان سازش کیخلاف آواز بلند کریں، خاموش بیٹھے تو برائی کا ساتھ دیں گے۔

عوام کی لائیو کالز کا جواب دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اپنے قوم کے نوجوانوں سے بات کرنا چاہتا ہوں،پاکستان اس وقت فیصلہ کن موڑ پر کھڑا ہے، اس وقت پاکستان کے مستقبل کی جنگ ہے۔

انہوں نے کہا کہ قوموں کی زندگی میں مشکل وقت آتے ہیں، ہمیں درست راستے کا انتخاب کرنا ہے، قوم نے آج فیصلہ کرنا ہے کہ ملک کو کس طرف لے کر جانا ہے، اللہ تعالیٰ کا حکم ہے کہ اچھائی کےساتھ اور برائی کیخلاف کھڑے ہو، جو معاشرہ اچھائی کا ساتھ دیتا ہے وہ زندہ ہوجاتا ہے۔

وزیراعظم نے کہا کہ جو معاشرہ کچھ نہیں کرتا وہ اصل میں برائی کے ساتھ کھڑا ہوتا ہے، وہ قوم تباہ ہوجاتی ہے جس میں اچھے اور برے کی تمیز ختم ہوجائے، آج بیرونی سازش کے تحت سیاستدانوں کی بکروں کی طرح نیلامی ہورہی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ یہاں میرجعفر اور میرصادق سودا کرنے کےلیے موجود ہیں، اگر نوجوان چپ بیٹھیں گے تو وہ برائی کا ساتھ دیں گے، نوجوانوں کو چاہیے کہ اپنے مستقبل کیلئے احتجاج کریں۔

عمران خان نے کہا کہ کیا باہر کی قوت 15ارب روپے خرچ کرکے حکومت گرا دے گی، برطانیہ زندہ معاشرہ ہےوہاں اچھےبرےکی تمیزہے
غداروں کوپرامن احتجاج سےخوف ہوتا ہے۔

مزید کہا کہ جھوٹ بول کر کسی کی حکومت گرانا برائی ہے، چاہتا ہوں کہ قوم میر جعفر اور میر صادق نہ بھولے، کہا گیا عمران خان کو ہٹائیں گے تو آپ سے تعلقات اچھے ہوں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ نیشنل سیکیورٹی کمیٹی اور کابینہ نے دستاویزات دیکھ لیے،آفیشل دستاویز میں کہا گیا ہے عمران کو ہٹاو تعلقات بہتر ہوجائیں گے۔

انہوں نے کہا کہ شہبازشریف نے 22 کروڑ عوام کو غلام بنا کر رکھ دیا ہے، شہبازشریف پر اربوں روپے چوری کے کیسزہیں،اس نے 22 کروڑلوگوں کوبھکاری قرار دیا۔

خاتون کے سوال ملک سے غداری کرنے والوں کے خلاف کیسز کب بنائیں گے؟ کے جواب میں انہوں نے کہا کہ وکیلوں سے مشاورت کی ہے، ملک سے غداری معاف نہیں کرینگے، سب پر کیسز بنائیں گے۔

انہوں نے کہا کہ میں ہمیشہ آخری گیند تک مقابلہ کرنے والا شخص ہوں، کل سب دیکھیں گے کہ میں کیسے ان سے مقابلہ کرتا ہوں، کل سب نے احتجاج کرنا ہے، میں چاہتا ہوں کہ قوم زندہ ۔

انہوں نے کہا کہ ، یہ اقتدار میں اس لیے آنا چاہتے ہیں تاکہ اپنے کرپشن کیسز ختم کریں۔

فوج پر تنقید سے متعلق سوال پر انہوں نے کہا کہ لوگوں کو پاک فوج سے منحرف کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے، اس ملک کو تحریک انصاف اور فوج نے اکھٹا رکھا ہوا ہے۔

انہوں نے کہا کہ خیبر پختونخوا میں تحریک انصاف نے بلدیاتی انتخابات میں کلین سوئپ کیا ہے، ن لیگ اور پیپلز پارٹی کا نام و نشان مٹ چکا ہے۔ کبھی نے نظیر کے دور میں پپپلز پارٹی پورے ملک کی جماعت تھی تاہم اب پی ٹی آئی پورے ملک کی جماعت بن چکی ہے۔

ملکی معیشت سے متعلق سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ چاہتا ہوں کہ معیشت کے ماہرین بیٹھے اور وہ دیکھیں کہ پی ٹی آئی اورماضی کی پارٹیوں نے کیا کیا، پیپلزپارٹی کے دور میں مہنگائی زیادہ تھی ، آج عالمی منڈی میں ہر چیز مہنگی ہے،عالمی منڈی میں پیٹرول، گھی، دالوں کی قیمتیں آسمان پر ہیں، 40سال بعد امریکہ میں مہنگائی کا ریکارڈ ٹوٹ گیا۔

انہوں نے کہا کہ آج ملک کی تاریخ میں ریکارڈ ایکسپورٹ میں اضافہ ہوا ہے، ن لیگ کے دور میں ایکسپورٹ میں اضافہ نہیں ہوا، ہم نے ریکارڈ ٹیکس اکٹھا کیا، 250ارب روپے پیٹرول، ڈیزل اور بجلی کی قیمتوں میں کمی کے مد میں خرچ کیا۔

عمران خان سے بات کرنا چاہتی ہوں نمبر نہیں مل رہا، مریم اورنگزیب

اپوزیشن پر تنقید کرتے ہوئے انہوں نے کہ جو ملک اصولوں پر چل رہے ہیں وہ ترقی کررہے ہیں، ہم اصولوں پر ہی نہیں چل رہے،مدینہ کی ریاست کی بنیاد انصاف، انسانیت اور خودداری پر رکھی گئی تھی۔

ان کا کہنا تھا کہ خواجہ آصف نے کہا ہم وینٹی لیٹر پر ہیں، ہم مرجائیں گے، میں کہتا ہوں ایسے جینے سے بہتر ہے آپ مر جائیں،یہ ساری سازش این آر او کیلئے کی گئی ہے۔

اورسیز پاکستانی کالر کے سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ اوورسیز پاکستانیوں کی بہت قدر کرتا ہوں، یہ لوگ اپنے ملک کیلئے ترستے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ شہبازشریف، نوازشریف او ر آصف زرداری کرپٹ ترین لوگ ہیں، یہ باہر کی سازش کا حصہ بن کر ملک پر مسلط ہوتے ہیں، کبھی بھی کوئی قوم بھکاریوں کی طرف ، اپنے لوگوں کو قربان کر کے ترقی نہیں کرتی،ذوالفقار علی بھٹو کی آزاد خارجہ پالیسی تھی، ان کو بھی اسی مولانا، نوازشریف وغیرہ نے قتل کرایا تھا۔

انہوں نے کہا کہ یہ وہ پاکستان نہیں جب ذوالقفار علی بھٹو کا قتل ہوا تھا، یہ سوشل میڈیا کا زمانہ ہے، یہاں سب کو سمجھ آگئی ہے کہ میرے خلاف سازش ہوئی ہے، میں صرف یہ چاہتا ہوں کہ قوم اس سازش کیخلاف احتجاج کریں۔

وزیراعظم نے کہا کہ امریکا نے اپوزیشن کے ساتھ مل کر سازش کی ہے، باپ ادھر اچکن سلوا کربیٹھا ہے بیٹا ادھرپنجاب میں خواب دیکھ رہا ہے، ن لیگ والوں سے پوچھتا ہوں آپ کو شریفوں کے علاوہ کوئی لیڈر نہیں ملتا؟

عمران خان نے کہا کہ یہ لوگ پروپیگنڈا کرکے میڈیا پر بہت پیسہ چلا رہے ہیں، 30سال تک یہ ایک دوسرے کو برا بھلا کہتے رہے، پلان بنا لیا کل ان کو اسمبلی میں شکست دے کر دکھاوں گا۔

فیصلہ عمران خان نے کرنا ہے، تحریک عدم اعتماد تحفہ ہے یا سازش؟ بلاول بھٹو

انہوں نے کہا کہ نوازشریف نے چھانگا مانگا، ججز کو پلاٹ دینا شروع کیے، نوازشریف اور آصف زرداری نے اس ملک سے اچھے برے کی تمیز ختم کر دی،اگر قوم میں اچھے برے کی تمیز ہوتی تو کیا سندھ ہاوس میں پیسے چلتے، اس لیے اپنے نوجوانوں کو کہتا ہوں کہ آپ نے انہیں قبول نہیں کرنا،ہمارے خریدے گئے لوگوں کو ن لیگ نے کہااگر پارٹی سے نکالا گیا ہم ٹکٹ دیں گے۔

وزیراعظم نے کہا کہ کل آپ کو انشااللہ خوشخبری دوں گا، جو لوگ ان کی طرف چلے گئے وہ بیٹھنا شروع ہوگئے ہیں، کل رات سے مجھے پیغامات آنا شروع ہوگئے ہیں، میں پرامید ہوں اپنے لوگوں کو مایوس نہیں کروں گا،یہ کھلی سازش ہے، امریکا نے اپوزیشن کے ساتھ ملکر حکومت بدلنے کی سازش کی، یہ لوگ پاکستانی عوام کو نہیں جانتے۔

مزید کہا کہ ادھر مریم نواز اپنے بیٹے کو سیاست میں لانے کیلئے تیار کررہی ہے، شہبازشریف ضمانت پر بیٹھ کر خواب دیکھ رہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ پارٹی ارکان سے کہتا ہوں آپ نے پرویزالٰہی کیلئے ووٹ دینا ہے، شریف فیملی سے زیادہ کرپٹ کوئی لوگ نہیں،لاہور کے لوگوں سے پوچھناچاہتاہوں کہ آپ کو شریف خاندن کے علاوہ کوئی اور نظرنہیں آتا۔


متعلقہ خبریں