وزیر اعظم کا خاتون اور کم سن بچی سے زیادتی کے واقعات کا سخت نوٹس


اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان نے لاہور میں موٹروے پر خاتون سے مبینہ زیادتی اور کراچی میں کم سن بجی سے زیادتی کے بعد قتل کرنے کے واقعہ کا سخت نوٹس لیا ہے۔

وزیراعظم نے موٹر وے پر خاتون سے مبینہ زیادتی کے واقعہ کا نوٹس لیتے ہوئے آئی جی پنجاب کو ملزموں کی فوری گرفتاری کا حکم دے دیا۔ وزیراعظم نے آئی جی پنجاب انعام غنی کو ہدایت کی کہ ملزموں کو فوری گرفتار کر کے سخت سے سخت سزا دی جائے۔

وزیراعظم آفس سے جاری بیان کے مطابق وزیراعظم عمران  نے متعلقہ آئی جیز سے دونوں واقعات کی رپورٹ طلب کرلی ہے۔

وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ خواتین کا تحفظ حکومت کی اولین ترجیح اور ذمہ داری ہے۔ کسی بھی معاشرے میں ایسی درندگی اور حیوانیت کی اجازت نہیں دی جا سکتی۔ ایسے واقعات ہماری سماجی اقدار کے منافی اور معاشرے پر بدنما داغ ہیں۔

وزیر اعظم نے معصوم بچوں اور خواتین سے زیادتی کے واقعات کے تدارک کے حوالے سے قوانین کو مزید موثر بنانے کے لئے اقدامات کرنے کی بھی ہدایت  کردی۔

خیال رہے کہ گزشتہ روز لاہور کے علاقے گجر پورہ میں موٹروے پر خاتون کو اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنانے کا انتہائی افسوسناک واقعہ پیش آیا تھا۔

رپورٹس کے مطابق دو افراد نے موٹر وے پہ ایک گاڑی کا شیشہ توڑ کر خاتون اور ان کے بچوں کو باہر نکالا جس کے بعد انہیں قریبی جھاڑیوں میں لے جا کر خاتون کو بچوں کے سامنے مبینہ طور پر زیادتی کا نشانہ بنایا۔

اطلاعات کے مطابق خاتون لاہور سے گوجرانوالا جارہی تھیں کہ گاڑی میں پیٹرول ختم ہو گیا تھا جس کی وجہ سے وہ رک کر اپنے خاوند کا انتظار کر رہی تھیں۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق ملزمان خاتون سے ایک لاکھ روپے نقد، سونے کے زیورات اور اے ٹی ایم کارڈز بھی لے گئے ہیں۔

پنجاب میں یہ افسوسناک واقعہ ایک ایسے وقت میں پیش آیا ہے کہ جب نئے آئی جی پنجاب کو اپنے عہدے کا چارج سنبھالے ہوئے محض چند ہی گھنٹے گزرے ہیں۔

اس سے قبل آئی جی پنجاب انعام غنی نے اپنے جاری کردہ بیان میں کہا کہ ہماری کوشش ہے جلد ملزمان تک پہنچ جائیں اور ملزمان تک پہنچنے کے لیے ثبوت بھی مل چکا ہے۔

انہوں نے کہا کہ سی سی پی او لاہور نے 2 ٹیمیں تشکیل دی ہیں اور دونوں ٹیمیں ملزمان کی گرفتاری کو یقینی بنائیں گی۔

یہ بھی پڑھیں: پنجاب: اغوا، قتل اور زیادتی کے واقعات میں اضافہ

واضح رہے کہ ایس ایس پی آئی اے اور ڈویژنل ایس پی کی سربراہی میں دو علیحدہ علیحدہ اسپیشل ٹیمیں تشکیل دی گئی ہیں جبکہ ڈی آئی جی انویسٹی گیشن لاہور مقدمہ کی تفتیش سے متعلق تمام تر معاملات کی خود نگرانی کر رہے ہیں۔

ہم نیوز کے مطابق وزیراعلیٰ نے آئی جی پنجاب سے واقع کی رپورٹ طلب کرتے ہوئے ہدایت کی ہے کہ سنگین جرم میں ملوث مجرمان کو جلد از جلد گرفتار کیا جائے اور مظلوم خاتون کو انصاف فراہم کیا جائے۔

یاد رہے کہ گزشتہ ہفتے کراچی کے علاقے عیسٰی نگری میں پانچ سالہ بچی عروہ کو زیادتی کے بعد قتل کردیا گیا تھا۔ کراچی پولیس نے بچی سے زیادتی کرنے والے ملزم کو گرفتار کرنے کا دعویٰ کیا ہے۔


متعلقہ خبریں