ملک بھر میں کورونا مریضوں کے لیے چودہ سو وینٹی لیٹرز دستیاب

فائل فوٹو


اسلام آباد: نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سنٹر این سی او کے مطابق ملک بھر میں کورونا مریضوں کے لیے چودہ سو وینٹی لیٹرز دستیاب ہیں جب کہ تین سو پچھتر مریض اس وقت وینٹی لیٹرز پر ہیں۔

ادارے کی جانب سے جاری کردہ تفصیلات میں بتایا گیا ہے کہ پنجاب میں تین سو ستاسی وینٹی لیٹرز، سندھ میں تین سو اڑسٹھ اور خیبر پختون خوا میں تین سو چالیس وینٹی لیٹرز دستیاب ہیں۔

این سی او سی کے مطابق اسلام آباد میں نوے، بلوچستان میں اڑتیس، گلگت بلتستان میں پانچ اور آزاد کشمیر میں تینتالیس وینٹی لیٹرز موجود ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: کورونا مریضوں کی خدمات پرمامورطبی عملےکیلئے خصوصی پیکج کا اعلان

این سی او سی کی جانب سے جاری کردہ تفصیلات کے مطابق ملک بھر میں کورونا مریضوں کے لیے 25 ہزار 610 بیڈز بھی مختص کیے گئے ہیں۔

نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سنٹر کے مطابق ملک بھر میں 5 ہزار 954 بیڈز کے ساتھ آکسیجن کی سہولت موجود ہے۔

پنجاب میں کورونا وائرس کے متاثرین کے لیے 9 ہزار دو سو چھہتر، سندھ میں آٹھ ہزار دو سو چوہتر جب کہ خیبر پختون خوا میں چار ہزار آٹھ سو چھپن بیڈز مختص کیے گئے ہیں۔

بلوچستان میں کورونا متاثرین کے لیے دو ہزار ایک سو اڑتالیس، اسلام آباد میں پانچ سو چھبیس، گلگت بلتستان میں 151 اور آزاد کشمیر میں تین سو اناسی بیڈز مختص کی جا چکے ہیں۔

دوسری جانب صوبہ پنجاب کے دارالحکومت لاہور کے متعدد سرکاری اسپتالوں کے آئی سی یوز میں کورونا وائرس کے مریضوں کے لیے جگہ ختم ہو گئی ہے۔

لاہور کے جناح اسپتال  اور جنرل اسپتال کے آئی سی یوز میں  جگہ بھر گئی ہے جب کہ کوٹ خواجہ سعید اسپتال کے آئی سی یو میں بھی جگہ باقی نہیں رہی ہے۔

یہ بھی پڑھیں: کورونا وائرس، پاکستان میں جون کے پہلے گیارہ روز خطرناک ثابت

جناح اسپتال کے آئی سی یو کے 15 بیڈز پر مریض موجود ہیں اور کسی نئے مریض کی گنجائش نہیں ہے جب کہ گنگا رام اسپتال کے دس میں سے صرف ایک بیڈ خالی رہ گیا۔

میو اسپتال کے آئی سی یو وارڈ  میں 80 فیصد  جگہ بھر گئی، اسپتال کے آئی سی یو کے 50 بیڈز میں سے صرف 10 خالی بچے ہیں۔


متعلقہ خبریں