پاکستان میں کورونا وائرس کے پانچویں کیس کی تصدیق، اسکردو میں بھی تعلیمی ادارے بند

چین میں کورونا کی نئی لہر نے خطرے کی گھنٹی بجا دی

فوٹو: فائل


اسلام آباد: پاکستان میں کورونا وائرس کا پانچواں کیس رپورٹ ہو گیا جبکہ اسکردو کے تعلیمی ادارے بھی 7 مارچ تک بند کر دیے گئے۔

وزیر اعظم عمران خان کے معاون خصوصی برائے صحت ڈاکٹر طفر مرزا نے کورونا وائرس کے پانچویں مریض کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ مریض کا تعلق فیڈرل ایریا سے ہے تاہم اس کی حالت بہتر ہے اور اُس کی بہترین نگہداشت ہو رہی ہے۔

ڈاکٹر ظفر مرزا نے میڈیا سے گزارش کی کہ وہ مریض کا نام اور اس کے خاندان کے بارے میں معلومات نہ دیں۔ حکومت کورونا وائرس سے نمٹنے کے لیے تیار ہے اور عوام کے تحفظ کے لیے تمام وسائل بروئے کار لائے جا رہے ہیں۔

دوسری جانب کورونا وائرس کے پیش نظر سرکاری و نجی تعلیمی ادارے 7 مارچ تک بند کر دیے گئے۔ محکمہ تعلیم کے مطابق تعلیمی اداروں کو حفاظتی اقدامات کے تحت بند کیا گیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں کورونا وائرس، پولیو ورکرز کو میدان میں اتارنے کا فیصلہ

واضح رہے کہ کورونا وائرس کے پھیلاؤ کے خدشے کے باعث سندھ حکومت نے بھی صوبے کے تمام اسکولوں کو 13 مارچ تک بند رکھنے کا اعلان کیا تھا۔

کورونا وائرس کی وجہ سے بلوچستان حکومت پہلے ہی تمام تعلیمی اداروں کو 15 مارچ تک بند کرنے کا اعلان کرچکی ہے۔ صوبائی حکومت نے میٹرک کے امتحانات بھی ملتوی کیے ہیں۔

غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق امریکہ میں مہلک بیماری کا مزید 4 افراد شکار ہو گئے ہیں جبکہ کورونا وائرس سے ہلاکتوں کی تعداد 6 تک پہنچ چکی ہے۔ امریکہ میں کورونا وائرس کے مریضوں کی تعداد 89 ہو گئی ہے۔

اٹلی میں بھی کورونا وائرس کی وجہ سے ہونے والی اموات کی تعداد 52 اور ایران میں 66 ہو گئی ہے۔ جنوبی کوریا میں 600 مزید کیسز رجسٹر ہونے کے بعد مریضوں کی تعداد 4 ہزار 812 تک پہنچ گئی۔

یہ بھی پڑھیں اسلام آباد: ایئرپورٹ سے کورونا وائرس میں مبتلا چار مشتبہ مسافروں کی پمز منتقلی

کورونا وائرس کی وجہ سے برٹش ائرویز اور ریان ائر نے اپنی سینکڑوں فلائٹس منسوخ کر دی ہیں۔ جن میں سے زیادہ تر پروازیں ہتھرو، اٹلی، فرانس، برمنگھم، جرمنی، نیویارک اور سوئٹزرلینڈ کی تھیں۔


متعلقہ خبریں