بولی وڈ اداکارہ ارمیلا مٹونڈکر بھی کشمیریوں کے حق میں بول پڑیں


اسلام آباد: بھارتی اداکارہ اور کانگریسی رہنما اُرمیلا مٹونڈکر بھی مقبوضہ کشمیر میں ہونے والے مظالم کے خلاف بول اٹھیں اور بھارتی آئین سے آرٹیکل 370 ہٹانے کے اقدام کو غیر انسانی قرار دے دیا ہے۔

اداکارہ نے میڈیا سے گفتگو میں کہا ہے کہ جموں وکشمیر میں آرٹیکل 370 غیرانسانی طریقے سے ہٹایا گیا ہے۔

ان کا کہنا ہے کہ ان کے سسر اور ساس کشمیر میں رہتے ہیں اور گزشتہ 22 روز سے ان سے رابطہ نہیں ہوا ہے۔

اداکارہ نے مزید بتایا کہ ان کے ساس سسر بلڈپریشر اور ذیابیطس کے مریض میں مبتلا ہیں اور وہ یہ بھی نہیں جانتیں کہ اس عرصہ میں ادویات ملی بھی ہیں یا نہیں۔

ایک ٹوئٹر پیغام میں انہوں نے کہا کہ ’بھارتی حکومت کی جانب سے کشمیر میں’سب اچھا ہے‘ کا راگ الاپنا حد سے زیادہ گری ہوئی حرکت ہے، ان کا کہنا تھا آرٹیکل 370 کو ختم کرکے یہ تاثر دیا جا رہا ہے کہ ایسا کشمیریوں کے روشن مستقبل کے لیے کیا گیا ہے، جو کہ سراسر غلط ہے، انہوں نے سوال اٹھایا کہ آخر کب تک مقامی قیادت اور عوام پر یہ تشدد جاری رہے گا؟‘


متعلقہ خبریں