بیگانی شادی میں عبداللہ دیوانہ بننے والے میاں بیوی گرفتار



لاہور: پاکستانی لڑکی کی چینی لڑکے سے شادی کے گواہ بننے والے میاں بیوی کو پولیس نے گرفتارکرلیا ہے۔

پاکستانی لڑکی مریم اور چینی لڑکے کی شادی میں لاہور کے رہائشی انور اور عزرا  گواہ بنے تھے لیکن پولیس نے ان پر پاکستانی لڑکی کو فروخت کرنے کا الزام عائد کردیا ہے۔

پولیس کی حراست میں موجود انور کے والد نے عدالت میں درخواست دائر کردی ہے جس میں ان کا موقف ہے کہ ان کے بیٹا اور بہو نے صرف بطور گواہ شادی میں شرکت کی۔

سیشن کورٹ میں درخواست پر سماعت ایڈیشنل سیشن جج رفاقت علی قمر نے کی جس کے دوران درخواست گزار کے وکیل نے بتایا کہ میاں بیوی کو چھڑانے کے لیے جانے والے رشتے داروں کو بھی پولیس نے تھانے میں بند کردیا ہے۔

درخواست گزار کے وکیل نے دلائل میں کہا کہ مریم نے چینی لڑکے سے محبت کی شادی کی ہے، جو باقاعدہ طورپر شادی ہال میں ہوئی ہے۔

ان کا مؤقف تھا کہ نکاح نامہ میں انور کا نام بطور گواہ موجود ہونے پر پولیس نے گرفتار کیا ہے، پولیس کی جانب سے انور اور عذرا کی گرفتاری غیرقانونی ہے۔

عدالت نے دلائل سننے کے بعد پولیس کی حراست میں موجود میاں بیوی کو عدالت میں پیش کرنے کا حکم دے دیا۔


متعلقہ خبریں