چین، پاکستان کو دو ارب ڈالر امداد دے گا، رپورٹ

چین

فوٹو: فائل


چین نے پاکستان کے زرمبادلہ کے ذخائر بڑھانے اور روپے کی قدر میں مزید کمی کو روکنے کیلئے  دو ارب ڈالر امداد پر رضامندی ظاہر کردی ہے۔

برطانوی اخبار فنانشل ٹائمز کی رپورٹ کے مطابق چین کی جانب سے امداد کا باقاعدہ اعلان نہیں کیا گیا تاہم اس کا مقصدعمران خان کی حکومت کو کمزو مالی صورتحال، زرمبادلہ کی قلت اور قرضوں کی بڑے پیمانے پرادائیگیوں میں مدد دینا ہے۔

چین کی جانب سے یہ امداد اس وقت سامنے آئی ہے جب پاکستان سات سے آٹھ ارب ڈالر کے پیکیج کیلئے آئی ایم ایف سے مذاکرات کررہا ہے۔ وزرات خزانہ اور آئی ایم ایف کے درمیان اسی ماہ میں بات چیت ہوگی جس کے دوران آئی ایم ایف کی جانب سے سخت شرائط پیش کیے جانےکا امکان ہے۔

رپورٹ میں اسلام آباد میں اعلیٰ حکومتی افسر کا حوالہ دیا گیا جن کا کہنا تھا کہ چین کی جانب سے پاکستان کیلئے امداد سے ثابت ہوتا ہے کہ چین چاہتا ہے کہ ہم بحران سے نکل آئیں۔

ان کا کہنا تھا کہ ہمیں روپے کی قدر میں گراوٹ کو روکنا ہے اور ایسا کرنے کے لیے ہم چین سے توقعات رکھ سکتے ہیں۔

پاکستان کو مالی مشکلات سے نکالنے کیلئے اس سے قبل سعودی عرب نے پاکستان سے چھ ارب ڈالر امداد کی حامی بھری تھی جس میں سے کچھ رقم اسٹیٹ بینک کو موصول ہوچکی ہے۔

اس کے علاوہ متحدہ عرب امارات نے بھی تین ارب ڈالر دینے کا وعدہ کر رکھا ہے۔

 

 


متعلقہ خبریں