سرگودھا: 14 سالہ ملازمہ پر مالکن کا بدترین تشدد

فوٹو: فائل


سرگودھا میں ایک 14 سالہ گھریلو ملازمہ کو مالکن نے بدترین تشدد کا نشانہ بناڈالا۔

تفصیلات کے مطابق تنزیلہ سعید نیازی نامی شخص کے گھر کام کرتی تھی جو ایک بجی بینک کا ملازم ہے۔

تنزیلہ کا کہنا ہے کہ گھر کی مالکن عظمیٰ اسے بدترین تشدد کا نشانہ بناتی تھی۔

تنزیلہ کے بھائی حسن علی کا کہنا ہے کہ اس کی بہن کو پانچ ماہ تک اپنے والدین سے ملنے نہیں دیا گیا۔

لواحقین کا الزام ہے کہ بدترین تشدد کے بعد ملزمان بچی کو جنرل بس اسٹینڈ پھینک کر فرار ہو گئے۔

ان کا کہنا ہے کہ بچی کو مالکن گرم اسرریاں لگاتی رہیں اور پائپ سے بھی تشدد کا نشانہ بنایا۔

دوسری جانب آر پی او سرگودھا کے نوٹس لینے پر تشدد کا نشانہ بننے والی گھریلو ملازمہ تنزیلہ کا طبی معائنہ کیا گیا۔

ابتدائی رپورٹ میں تنزیلہ پر تشدد ثابت ہونے پر تھانہ کینٹ پولیس نے مقدمہ درج کر لیا۔

مقدمہ سعید خان نیازی اور ان کی اہلیہ عظمیٰ سعید کے خلاف درج کیا گیا جبکہ گرفتاری کے لیے بھی ہدایات بھی جاری کردی گئیں

پولیس نے مقدمہ میں دفعہ 328 اے کے تحت میاں بیوی کے خلاف مقدمہ نمبر538/18 درج کر لیا۔


متعلقہ خبریں